ہم آپ کو واپس ہونے میں مدد کرسکتے ہیں

©dpa

اپنے وطن لوٹنے میں اخراجات آتے ہیں۔ فلائٹ کیلئے ادا کرنے کی ضرورت ہے، نئی رہائش تلاش کرنا اور اس میں منتقل ہونا پڑتا ہے۔ وفاقی حکومت اس عمل سے اچھی طرح آگاہ ہے اور رضاکار طور پرلوٹنے والے کو یہ چیزیں بذات خود کرنے کے لئے مجبور نہیں کرتی ہے۔

جرمن حکومت REAG/GARP کے ذریعہ ایسے بیرون باشندوں کے کی مدد کرتی ہے جو رضاکارانہ طور پر اپنے مادر وطن واپس ہونا چاہتے ہیں۔ اس پروگرام کے پس منظر میں سفری اخراجات کی ادائیگی اورسفری گرانٹس کو لاگو کیا جاسکتا ہے تاکہ واپس لوٹنے والوں کا مالی بوجھ ممکن حد تک کم سے کم کر دیا جائے۔

اتنا ہی نہیں وفاقی جمہوریہ ان کی آمد اور اپنے آبائی ملک میں چند ابتدائی مہینے کے دوران اسٹارٹ دی لائف پلس پروگرام کے ذریعہ واپس لوٹنے والوں کی مدد بھی کرتا ہے۔ یہ مالی تعاون کا اضافی وسائل مہیا کراتا ہے جو 1200 یورو کی رقم تک ہوسکتی ہے اور یہ دو قسطوں میں ادا کیا جاتا ہے۔ ” آپ کا ملک اب آپ کا مستقبل ” مہم  جو 31 دسمبر 2018 کو ختم ہورہی ہے، اس پروگرام کا حصہ ہے۔ واپس ہونے والوں کےلئے زندگی کی نئی شروعات، رہائش اور رنگ وروغن میں ہونے والے اخراجات کو آسان بنانے جیسے کہ رسوئی گھر یا طہارت خانہ کا سازوسامان کےلئے پیسہ دیا جاتا ہے۔  ملک میں موجود انٹرنیشنل آگنائزیشن برائے مائگریشن (آئی او ایم) کا  اسٹاف متعلقہ تعاون کے سلسلے میں حتمی فیصلہ لیتا ہے۔ اہل خانہ کیلئے مدد کی رقام 3000 یورو تک ہوسکتی ہے جب کہ منفرد شخص کے لئے یہ 1000 یورو تک ہوسکتی ہے۔

 

©dpa

 

مندرجہ ذیل ممالک سے واپس ہونے والے اس مدد کے لئے درخواست دے سکتے ہیں۔

افغانستان، الجیریا، ارمانیا٭، آئزربایجان، بنگلادیش،بینن، برکینو فیسو، کیمرون، چین، کوٹے دی آئر، ڈیموکریٹک جمہوریہ کانگو، مصر، اریتریا، یوتھوپیا، گامبیا، جارجیا٭، گھانا، گینیا، گینیا بساؤ، ہندوستان، ایران، عراق، کینیا، لبنان، لیبیا، مالی، منگولیا، مراقش، دی نائجر، نائجریا، پاکستان، روسی فیڈریشن٭، سینیگل، سیرا لیون، سری لنکا، سوڈان، شام، تاجکستان، ٹوگو، تیونشیا، یوکرین٭ اور ویتنام۔

٭ ارمانیا، آئزربائجان، جارجیا، روسی فیڈریشن، ترکی اور یوکرین کے باشندوں کو 1 دسمبر 2017 سے قبل پناہ گزیں اسلوب کار میں اپنا اندراج کرایا ہو اور متعلقہ ویزا پالیسی میں چھوٹ دینے قبل(جارجیا 28 مارچ 2017/ یوکرین 11 جون 2017) جرمنی میں داخل ہوا ہو۔

ایسے مہاجرین جو تیسرے ملک میں داخل ہوتے ہوئے اسے اپنے ساتھ لے جانے یا فلسطینی خطے یا صومالیا میں واپس لوٹنا چاہتا ہو وہ باز استحکام تعاون کے لئے درخواست دینے کا اہل نہیں ہے۔

 

” آپ کا ملک۔ اب آپ کا مستقبل ” پروگرام کے بارے میں تفصیلی معلومات کیلئے، وزٹ کریں:

https://www.returningfromgermany.de/de/programmes/starthilfe-plus

ریٹرن کونسلنگ مراکز سے مزید معلومات حاصل کرسکتے ہیں:

https://www.returningfromgermany.de/de/centres