icon-share

حقائق جانیے۔ تارکین وطن کوکیا جاننے کی ضرورت ہے، یہاں دیکھیں

سچ یا جھوٹ؟

شوہر یا بیوی جرمنی میں = کیا ان کے ساتھ ملنے کا حق ہے؟

نہیں

جو شخص جرمنی میں اپنے شریک حیات سے ملنے کا خواہشمند ہے پہلے اسے چند شرائط کا پورا کرنا لازمی ہے۔

مزید »

سچ یا جھوٹ؟

کیا یہ بات درست ہےکہ وہ لوگ جن کی شناخت یونان میں پناہ گزیں کے طور پر کی جاتی ہے انہیں جرمنی میں کام کرنے کی اجازت ہے؟

نہیں

نہیں۔ اصول یہ ہے کہ غیر یوروپی ممالک کے شہریوں کو یوں ہی وفاقی جمہوریہ جرمنی میں داخل ہونے اور وہاں کام کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ انہیں ملک میں داخل ہونے سے پہلے ورک ویزا کے لئےدرخواست دینا ضروری ہے۔ یہی اصول ایسے پناہ گزیں پر لاگو ہوتا ہے جن کے پاس دیگر ممالک، مثال کے طور پر یونان کے ذریعہ جاری کردہ سفری دستاویز ہے۔

مزید »

سچ یا جھوٹ؟

کیا مہاجرین کے بچوں کو جرمنی میں رہنے کی اجازت ہے اگر ان کی پیدائش اسی ملک میں ہوئی ہو؟

نہیں

نہیں۔ چاہےکسی بچہ کی پیدائش جرمنی میں ہی ہوئی ہو، یہ خودساختہ طور پر رہائش کا اجازت نامہ حاصل نہیں کرے گا۔

مزید »

سچ یا جھوٹ؟

آباد کاری پروگرام کے تحت کیا جگہ خریدنا ممکن ہے؟

نہیں

بازآبادکاری پروگرام کےسیاق و سباق کے اندر، جرمنی اور دیگر یوروپی ممالک مستقل طور پر پناہ گزین کے طور پر لیتے ہیں، خاص طور پر رہائش ملک سے براہ راست حفاظت کی ضرورت کے تحت۔

مزید »

سچ یا جھوٹ؟

کیا وفاقی جمہوریہ جرمنی کا ویزا خریدنا ممکن ہے؟

نہیں

جی نہیں۔ ویزا نہ خریدے جاسکتے ہیں اور نہ ہی کسی اور کو دیے جاسکتے ہیں۔جرمنی میں داخلے کا ویزا شخصی بنیادوں پر ملتا ہے اور کسی خاص فرد کو ہی جاری کیا جاتا ہے۔ وفاقی جمہوریہ جرمنی کے سفارت خانے اور قونصل خانے ہی صرف ویزا جاری کرسکتے ہیں۔

مزید »

سچ یا جھوٹ؟

کیا جرمنی میں موجود تمام پناہ گزینوں کو یہ حق ہے کہ وہ اپنے اہلخانہ کے ساتھ دوبارہ مل کر رہ سکتے ہیں؟

نہیں

ایسا نہیں ہے۔ حالانکہ اپنے اہلخانہ کےساتھ رہنے کی خواہش قابل فہم ہے مگر ہر کیس میں ایسا ممکن نہیں ہے۔ پناہ گزینوں اور مہاجرین کو جرمنی میں اپنے اہلخانہ کے ساتھ زندگی گزارنے کا حق حاصل ہے یا نہیں اس بات کا انحصار کئی مختلف عوامل پر ہے۔

مزید »

سچ یا جھوٹ؟

کیا جرمنی ہجرت کرنے کی کوئی لاٹری ہے؟

نہیں

نہیں! جرمنی ہجرت کا ایک لاٹری ٹکٹ بس ایک کلک دور ہے – اتنی اچھی بات سچ نہیں ہو سکتی؟ یہ سچ ہے۔ جرمنی آنے کے لیے لاٹری جیسی کوئی چیز نہیں ہے۔ جعلی ویب سائٹوں اور سوشل میڈیا پر افواہوں سے محتاط رہیں۔

مزید »

اوپر کی طرف واپس